لاہور: حمزہ شہباز رمضان شوگر مل کیس میں کمرہ عدالت سے گرفتار

Spread the love

ہم اپنی درخواست ضمانت واپس لیتے ہیں عدالت نے جو فیصلہ کرنا ہے کر دے، سلمان اسلم بٹ

21 کروڑ روپے کی لاگت سے رمضان شوگر ملز نالہ تعمیر کیا گیا تھا اور اس میں حمزہ شہباز ملوث تھے

لاہور (کورٹ رپورٹر) لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس سید مظاہر علی اکبر نقوی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف محمد حمزہ شہباز شریف کی جانب سے رمضان شوگر ملز اور منی لانڈرنگ کیس میں عبوری ضمانت کی درخواستیں واپس لینے کی بنیاد پر خارج کر دیں۔

ضمانت کی درخواستیں خارج ہونے کے بعد نیب اہلکاروں نے حمزہ شہباز کو کمرہ عدالت سے گرفتار کر لیا۔ لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس سید مظاہر علی اکبر نقوی کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے حمزہ شہباز کی عبوری ضمانت میں توسیع کے حوالہ سے درخواستوں پر سماعت کی۔ دوران سماعت حمزہ شہباز کے وکیل سلمان اسلم بٹ کا دلائل دیتے ہوئے کہنا تھا کہ نیب پہلے ہمیں فنانشل مانیٹرنگ یونٹ کے خط کی کاپی فراہم کرے تاکہ ہم اپنے اگلے دلائل جاری رکھیں تاہم عدالت جسٹس سید مظاہر علی اکبر نقوی نے کہا کہ وہ دوسری سٹیج اور ٹرائل کورٹ کا معاملہ ہے اس موقع پر آپ کو میرٹ پر دلائل دینا ہوں گے لیکن ٹرائل کورٹ کی بات یہاں نہیں کرنی ہو گی۔

اس پر سلمان اسلم بٹ کا کہنا تھا کہ ہم اپنی درخواست ضمانت واپس لیتے ہیں عدالت نے جو فیصلہ کرنا ہے کر دے۔ اس پر عدالت نے رمضان شوگر ملز اور منی لانڈرنگ کیس میں عبوری ضمانت کی درخواستیں واپس لینے کی بنیاد خارج کر دیں۔ دوران سماعت نیب پراسیکیوٹر جہانزیب بھروانہ نے کہا کہ 21 کروڑ روپے کی لاگت سے رمضان شوگر ملز کو فائدہ پہنچانے کے لئے نالہ تعمیر کیا گیا تھا اور اس میں حمزہ شہباز ملوث تھے۔

انہوں نے کہا کہ منی لانڈرنگ کیس میں حمزہ شہباز نے غیر قانونی طور پو اثاثے بنائے اور جو اثاثے بنائے وہ آمدن سے مطابقت نہیں رکھتے جبکہ سال 2015سے لے کر 2018 تک حمزہ شہباز کے اثاثوں کی مالیت 41 کروڑ روپے تھی تاہم 38 کروڑ روپے کے اثاثوں کی وضاحت حمزہ شہباز نہیں دے سکے۔ ا نہوں نے کہا کہ حمزہ شہباز کے بینک اکائونٹس میں 40 لوگوں نے بیرون ملک سے پیسے ٹرانسفر کئے اور 38 لوگوں سے ہم نے پوچھ گچھ کی تو انہوں نے کہا کہ ہمیں معلوم ہی نہیں کہ ہمارے بینک سے کیسے یہ پیسے ٹرانسفر ہوئے، یعنی یہ بھی جعلی بینک اکائونٹس کا معاملہ تھا۔

جہانزیب بھروانہ کا کہنا تھا کہ جن دو منی ایکسچینجرز نے حمزہ شہباز کی جانب سے پاکستان سے پیسے باہر بھجوائے ان دونوں کو نیب نے گرفتار کر لیا ہے اور اس حوالہ سے واضح ثبوت موجود ہیں۔ کمرہ عدالت میں (ن) لیگی وکلاء کی بڑی تعداد موجود تھی اور وکلاء حمزہ شہباز کے ساتھ سیلفیاں بنا تے رہے۔ جبکہ کمرہ عدالت کے باہر بھی (ن)لیگی کارکنوں کی بڑی تعداد عدالت میں موجود تھی۔

Leave a Reply