جیالوں کاکراچی سمیت سندھ کے تمام بڑے شہروں میں احتجاج

Spread the love

کراچی (سٹاف رپورٹر)اسلام آباد ہائیکورٹ کی جانب سے جعلی اکاؤنٹ کیس

میں پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کی

ضمانت منسوخ ہونے اور قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے انہیں گرفتار

کیے جانے کے خلاف ملک کے مختلف شہروں میں پی پی پی کارکنوں نے

مظاہروں اور شدید احتجاج کا کا آغاز کردیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق آصف علی

زرداری کی گرفتاری کے فوری بعد پیپلز پارٹی کراچی ڈویڑن کی جانب سے

احتجاج کا فیصلہ کیا گیا اور سندھ میں کل (11) جون کو یوم سیاہ منانے اعلان

کیا۔پی پی پی رہنما نثار کھوڑو کا کہنا تھا کہ احتجاج سندھ بھر کے ضلعی

ہیڈکوارٹرز میں ہوگا اور یہ مکمل طور پر پرامن ہوگا۔بعد ازاں سکھر میں آصف

زرداری کی گرفتاری کے خلاف پی پی پی جیالوں نے احتجاج کیا اور قومی

شاہراہ بلاک کردی۔قومی شاہراہ بلاک ہونے کے نتیجے میں سندھ اور پنجاب کے

درمیان ٹریفک کی آمدورفت معطل ہوگئی۔علاوہ ازیں لاہور کے علاقے گڑھی

شاہو اور فیروز پور روڈ پر بھی پی پی پی جیالوں کی جانب سے احتجاج کیا گیا

اور ٹائر جلا کر سڑک بلاک کر دی۔آصف زرداری کی گرفتاری سے قبل قومی

اسمبلی میں اپوزیشن نے احتجاج کیا تھا۔، پیپلز پارٹی کے مشتعل کارکنوں کی

جانب سے سندھ کے کئی شہروں میں فائرنگ و توڑ پھوڑ کی گئی اور، زبردستی

دکانیں بند کروا دی گئیں،پیپلز پارٹی سندھ کا کہنا ہے کہ آج 11 جون کو سندھ

بھر میں احتجاج کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ سندھ بھر کے ضلعی ہیڈکوارٹرز

میں کارکناناحتجاج کرینگے۔ احتجاج مکمل طور پر پرامن ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ

متنازع عدالتی فیصلوں کے ذریعے پیپلزپارٹی کو جھکایا نہیں جا سکتا۔متنازع

فیصلوں کے باجود عدالتوں میں ہی بے گناہی ثابت کرنے پر یقین رکھتے ہیں۔ نثار

کھوڑو نے کہا کہ عدالتوں کا احترام کرتے ہیں مگر متنازع فیصلوں پرپرامن

احتجاج کا بھی حق رکھتے ہیں وفاقی حکومت اپوزیشن کے قائدین کیخلاف

کاروائیاں کروا کر اپنی نااہلی نہیں چھپا سکتی۔



Please follow and like us:

Leave a Reply