Jahangir Tareen 132

عہدے کے بغیر بھی عمران خان کے ساتھ رہونگا: جہانگیر ترین

Spread the love

لاہور(وائس آف ایشیا)جہانگیر ترین عمران خان کے بہت قریب سمجھے جاتے ہیں اگرچہ وہ کوئی عہدہ تو

نہیں رکھتے مگر اس وقت بھی پارٹی میں ان کا اچھا خاصااثرورسوخ ہے اور وزیراعظم عمران خان فیصلوں

میں ان کی رائے کو اہمیت دیتے ہیں۔جہانگیر ترین نے جب کابینہ کے اجلاس اور دیگر میٹنگ میں شمولیت کی

تو کئی وزرا نے اعتراض کیا، جبکہ کچھ لوگوں نے ببانگ دہل بھی میٹنگ میں ان کی موجودگی پر اعتراض

کیا۔اسی حوالے سے نجی ٹی وی چینل کے میزبان کامران خان نے جہانگیر ترین سے سوال کیا کہ جب آپ

کوئی سرکاری عہدہ یا وزارت نہیں رکھتے تو پھر میٹنگ یا اجلاسوں میں کیوں شرکت کرتے ہیں۔ اس پر

جہانگیر ترین نے کہاکہ ضروری نہیں جس بندے کے پاس عہدہ ہو وہی جا سکتا ہے میں پارٹی کا ورکر ہوں

اور پاکستانی شہری ہوں اور ملک و قوم کے لیے کچھ کرنا چاہتا ہوں لہٰذا میں وزیراعظم صاحب کو مشورہ دے

سکتا ہوں۔جب میری ضرورت ہے میں خان صاحب کے ساتھ کھڑا ہوں اور لوگوں کی باتوں سے مجھے کوئی

فرق نہیں پڑتا۔ کامران خان نے شاہ محمود قریشی کے ساتھ ان کی نوک جھونک کا ذکر کیا تو جہانگیر ترین

کاکہنا تھا کہ پارٹی کے اکثر لوگ اس چپقلش کو کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں جبکہ میں خود ہمہ وقت

صلح کرنے کے لیے تیار ہوں۔ پارٹی کے اندر کا ماحول کافی حد تک نارمل ہو چکا ہے امید ہے جلد ہی تعلقات

میں بہتری آجائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں