23 مئی کے واقعات ایک نظر میں

Spread the love

واقعات

1915ء جنگ عظیم اول کے دوران اٹلی نے آسٹریا،ہنگری اور جرمنی کے خلاف جنگ کا اعلان کیا

1929ء بچوں میں مقبول کارٹون مکی ماؤس کا پہلا بولتا ہوا کارٹون دی کارنیول ریلیز کیا گیا

1995ء کمپیوٹرپروگرامنگ لینگویج جاوا کا پہلا ورژن متعارف کرایا گیا

2009ء پاکستان آرمی نے سوات میں آپریشن راہ راست شروع کیا

ولادت

1573ء جگت گو سائیں یا بلقیس مکانی، مغل شہنشاہ نورالدین جہانگیر کی بیوی اور مغل ہندوستان کی ملکہ تھی۔ جگت گوسائیں کا بیٹا شاہ جہاں تھا۔ جگت گوسائیں کی پیدائش 13 مئی 1573ء کو جودھ پور میں ہوئی۔ مغل تواریخ میں جگت گوسائیں کو عموماً جودھ پوری شاہزادی کے نام سے بھی یاد کیا گیا ہے۔ جگت گوسائیں کا باپ راجہ ادھے سنگھ تھا جو موٹا راجہ بھی کہلاتا تھا۔ ماں رانی من رنگ دیوی تھی جو گوالیار کے راجہ اسکاران کی بیٹی تھی۔ راجہ اسکاران راجہ بہاری مل کی حمایت سے امبر کی بھی راجہ تسلیم کیا جاتا تھا۔ جگت گوسائیں کا دادا راجہ راؤ مال دیو راٹھور تھا جس نے بحیثیت راجہ مارواڑ 1532ء سے 1562ء تک حکومت کی۔ 19 اپریل 1619ء کو جگت گوسائیں کا 45 سال کی عمر میں اکبرآباد کے ایک نواحی علاقے سہاگپور میں انتقال ہوا۔

1705ء کریم خان زند خاندان زند کا بانی تھا جس نے ایران پر 1751ء سے 1779ء تک حکومت کی۔ اس نے ما سوائے خراسان تمام ایران پر حکومت کی۔ اس کے علاوہ قفقاز کے کچھ علاقوں اور بصرہ پر بھی کچھ سال قبضہ کیا۔

1707ء کارل لینیس (Linnaeus) (1707-1778) سویڈن کا سائنس دان اور ماہر حیاتیات تھا۔ اس نے جانداروں کے نام دینے کا مخصوص طریقہ بنایا۔ اس میں نام کا پہلا حصہ جنس کو اور دوسرا حصہ نوع کو ظاہر کرتا ہے۔ اس نے 4378 مختلف پودوں اور جانوروں کی انواع کی گروہ بندی کی۔

1844ء عبد البہاء یا عباس آفندی 23 مارچ 1844ء میں بمطابق 1260ھ کو تہران میں اس دن پیدا ہوئے جس دن باب شیرازی نے اپنی نبوت کا اعلان کیا۔ اُنہوں نے اپنے والد بہاء اللہ کی تعلیمات میں بہت اضافے کیے اور اُسے قدیم و جدید کا مرقع بنا کر پیش کیا تاکہ بہائیت کی تبلیغ میں آسانی ہو سکے۔

1891ء پارلگر کیوسٹ 1891تا 1974 ایک سویڈش کے لکھاری تھے آپنے نوبل ادب انعام 1951 میں جیتا۔

1908ء جان باردین ایک امریکی طبیعیات دان اور دو دفعہ طبعیات کا نوبل انعام جیتنے والے واحد شخص ہیں۔ انہوں نے پہلی دفعہ یہ انعام 1956 میں والٹر ہوایسن براطین اورولیم شوکلی کے ساتھ مشترکہ جیتا جس کی وجہ ٹرانسسٹر کی ایجاد تھی۔ جبکہ دوسری دفعہ یہ انعام 1972 میں انھوں نے اپنے ہم وطن سائنسدانوں لیون کوپر اور جوہن رابرٹ سکریفر کے ہمراہ سوپر کنڈکٹیوٹی پر کام کرنے کی وجہ سے جیتا۔ ان کا انتقال 30 جون 1991 کو ہوا۔

1934ء مریم جمیلہ (پیدائشی نام: مارگریٹ مارکس) معروف مصنفہ، صحافی، شاعرہ اور مضمون نگار تھیں جو 23 مئی 1934ء کو نیو یارک کے ایک یہودی خاندان میں پیدا ہوئی۔ جنوبی افریقا کے شہر ڈربن سے شائع ہونے والے مسلم ڈائجسٹ کے لیے تحاریر لکھنے کے بعد انہوں نے 24 مئی 1961ء کو اسلام قبول کر لیا۔ جمیلہ اسلام کے حوالے سے دو درجن سے زائد کتب کی مصنفہ تھیں۔ وہ پاکستان کے سید ابو الاعلیٰ مودودی کی تعلیمات سے بے حد متاثر تھیں۔ اس لیے اسلام قبول کرنے کے بعد انہوں نے پاکستان میں سکونت اختیار کی۔ ان کے اسلام قبول کرنے کی وجہ مسلم ڈائجسٹ میں سید مودودی کا چھپنے والا مضمون حیات بعد الموت تھا جس کے بعد انہوں نے 5 دسمبر 1960ء کو سید ابو الاعلیٰ مودودی سے بذریعہ خط پہلا رابطہ کیا۔ مودودی اور جمیلہ کے درمیان میں خط کتابت کا یہ سلسلہ 1962ء تک جاری رہا۔ ان خطوط کا موضوع اسلام اور مغرب ہوتا تھا۔ دونوں کے خطوط بعد ازاں مولانا مودودی اور مریم جمیلہ کی خط کتابت نامی ایک کتاب کے ذریعے شائع کیے گئے۔ 1962ء میں وہ لاہور پہنچیں جہاں انہوں نے موددوی اور ان کے اہل خانہ سے ملاقات کی۔ بعد ازاں انہوں نے پاکستان میں ہی محمد یوسف خان نامی شخص سے شادی کی۔ وہ محمد پکتھال کے ترجمہ قرآن اور محمد اسد کی یہودیت چھوڑ کر اسلام قبول کرنے سے بے حد متاثر تھیں۔ وہ بروز بدھ 31 اکتوبر 2012ء کو لاہور میں انتقال کر گئیں۔

1961ء سہیل وڑائچ ایک مشہور اور نامور صحافی ہے۔ آپ اپنے مشہور پروگرام ایک دن جیو کے ساتھ کے بدولت زیادہ معروف ہیں۔ انہوں نے روزنامہ جنگ میں بہت طویل عرصہ کام کیا کچھ دنوں کے لیے دنیا میڈیا گروپ مں گئے مگر چھوڑ کر دوبارہ جیو نیوز سے منسلک ہو گئے اور آج کے دن تک جنگ گروپ سے ساتھ ہیں۔

وفات

577ء حضرت آمنہ بنت وہب، پیغمبر اعظم حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی والدہ محترمہ ہیں۔ آپ کے والد کا نام وہب بن عبد مناف تھا۔ آپ کا تعلق قبیلہ بنو زہرہ سے تھا جو قریش ہی کا ایک ذیلی قبیلہ تھا۔ آپ کا سلسلہ نسب حضور صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کے جدِ امجد عبد مناف بن قصی سے ملتا ہے۔ محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کے والد عبد اللہ بن عبد المطلب شادی کے کچھ عرصہ بعد حضور صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی پیدائش سے تقریباً چھ ماہ پہلے وفات پا گئے۔ اس کے بعد آپ صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم حضرت آمنہ کے زیرِ پرورش رہے۔ حضرت آمنہ مکہ اور یثرب (مدینہ) کے درمیان ایک سفر کے دوران ابواء کے مقام پر وفات پا گئیں۔ یہ 577ء تھا اور حضرت آمنہ حضور صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کو یثرب (مدینہ) لے جا رہی تھیں تاکہ وہ اپنے ماموں سے ملیں اور اپنے والد عبد اللہ کی قبر کی زیارت بھی کریں۔ آپ اپنے قبیلہ میں سیرت النساء کے نام سے مشہور تھیں۔ آخری حج کے دوران آنحضرت صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے ان کی قبر مبارک کی زیارت کی اور ان کو یاد کر کے روئے۔ یہ جگہ ایک پتھریلا علاقہ ہے جو ایک پہاڑی کا ہموار حصہ ہے۔

1524ء اسماعیل صفوی شہنشاہ ایران، صفوی خاندان کا بانی۔ 1502ء میں تخت نشین ہوا۔ عربوں کے اقتدار کے بعد پہلی بار ایران آزادانہ حیثیت دی اور شیعیت کو ملکی مذہب قرار دیا۔ ترکی زبان کا صاحب دیوان شاعر بھی تھا، خطائی تخلص رکھتا تھا۔ وہ 17 جولائی 1487ء کو پیدا ہوا۔

1884ء سریندر سائی بھارت کی ریاست اوڈیشا کے ایک مشہور مجاہد آزادی رہ چکے ہیں۔ ان کی اور ان کے معاون ساتھیوں کی کوششوں کی وجہ سے اور کئی دوسروں نے برطانیویوں کی مزاحمت کی اور کامیابی سے مغربی اوڈیشا کے علاقے کو ایک عرصے تک برطانوی حکمرانی سے بچائے رکھا تھا، حالاں کہ اس کی وجہ سے ان کے کچھ ساتھیوں کو انگریز حکومت نے خاموشی سے مار ڈالا، کچھ کو سزائے کالا پانی کے لیے اس وقت کم آبادی والے خطرناک انڈمان و نکوبار جزائر بھیجا گیا تھا۔ کچھ ساتھی اور خود سریندر سائی اسیری کی حالت ہی میں دنیا سے رخصت ہو گئے تھے۔ وہ 23 فروری 1809 کو پیدا ہوئے۔

1937ء محبوب عالم گوجرانوالہ سے تعلق رکھنے والے ایک ہندوستانی صحافی تھے جنھیں ایشیائی صحافت میں رہبر کی حیثیت حاصل تھی۔ 1888ء میں انھوں نے پیسہ اخبار کے نام سے ایک روزنامہ جاری کیا۔ یہ اخبار سیاسی اور سماجی خبروں کا احاطہ کرتا تھا۔ وہ 21 فروری 1862ء کو پیدا ہوئے۔

1945ء ہائنرش ہملر، نازیوں کے نیم فوجی دستے ایس ایس (شُٹس شٹافل) کے سربراہ ہِملر نازی جماعت کے اُن ارکان میں سے ایک تھے، جو براہِ راست ہولوکوسٹ (یہودیوں کے قتلِ عام) کے ذمہ دار تھے۔ پولیس کے سربراہ اور وزیر داخلہ کے طور پر بھی ہِملر نے ’تھرڈ رائش‘ کی تمام سکیورٹی فورسز کو کنٹرول کیا۔ ہِملر نے اُن تمام اذیتی کیمپوں کی تعمیر اور آپریشنز کی نگرانی کی، جہاں چھ ملین سے زائد یہودیوں کو موت کے گھاٹ اُتارا گیا۔ وہ 7 اکتوبر 1900ء میں پیدا ہوئے۔

2015ء کریسٹوفر اے۔ پسارائیڈامریکی ماہر اقتصادیات تھے اقتصا دیات میں ان کی کام کی اہمیت کو دیکھ کر 1994 میں انھیں رینہارڈ سیلٹن اور جون ہارسانئے کو نوبل میموریل انعام برائے معاشیات مشترکہ طور پر دیا گیا۔ وہ 13 جون 1928 کو پیدا ہوئے۔

تعطیلات و تہوار

1568ء ہالینڈ نے اسپین سے آزادی حاصل کی

کچھووں کا عالمی دن

Please follow and like us:

Leave a Reply