سرکاری اداروں پر قرضوں کا بوجھ 1593 ارب روپے سے تجاوز کر گیا

Spread the love

اسلام آباد( مانیٹر نگ ڈیسک) قومی ایئر لائن (پی آئی اے)، سٹیل ملز اور واپڈا

سمیت دیگر سرکاری اداروں پر قرضوں کا بوجھ 1593 ارب روپے سے تجاوز

کر گیا ہے۔سرکاری ادارے عوام کی جیبوں پر بھاری پڑنے لگے۔ عوام کی خون

پیسے کی کمائی سے حاصل کیا گیا۔ ٹیکس خسارے میں ڈوبے سرکاری اداروں پر

خرچ کیا جا رہا ہے۔رواں مالی سال کے نو ماہ میں سرکاری ادارے مزید 294

ارب روپے کے مقروض ہو گئے ہیں۔ سٹیٹ بینک کے مطابق سرکاری اداروں

کے قرضے 1593 ارب روپے سے بھی تجاوز کر چکے ہیں۔تفصیلات کے

مطابق مارچ 2019ء تک قومی ائیرلائن (پی آئی اے) پر واجب الادا قرضے 156

ارب روپے، واپڈا کے قرضے 88 ارب روپے، پاکستان سٹیل ملز جو گزشتہ چار

سال سے مکمل بند ہے، قرضوں کا حجم 43 ارب روپے تک پہنچ چکا ہے۔ اس

کے علاوہ دیگر سرکاری ادارے اس وقت 1084 ارب روپے کے مقروض ہیں۔

معاشی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اگر حکومت نے قرض میں ڈوبے ان اداروں

کی نجکاری میں تیزی نہ دکھائی تو یہ ادارے عوام سے وصول کیے گئے ٹیکسوں

پر ہی چلتے رہیں گے۔


قرضوں کا بوجھ

Please follow and like us:

Leave a Reply