210

قومی اسمبلی اجلاس ،جنوبی پنجاب کو صوبہ بنانے کی تحریک کثرت رائے سے منظور

Spread the love

اسلام آباد (جنرل رپورٹر) قومی اسمبلی میں پیر کو جنوبی پنجاب کو صوبہ بنانے کے لیے ہاؤس کی خصوصی

کمیٹی کی تشکیل کی حکومتی تحریک کو کثرت رائے سے منظور کر لیا گیا ۔ خصوصی کمیٹی پارلیمانی لیڈرز

پر مشتمل ہو گی۔وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ نے حکومتی تحریک کی مخالفت کر دی ہے۔وزیر خارجہ شاہ

محمود قریشی نے کہا ہے کہ آئینی وعدہ پورا کیا جا رہا ہے۔ پیر کو بہاولپور سے رکن مخدوم سمیع الحسن

گیلانی نے صوبہ جنوبی پنجاب بنانے کا آئینی ترمیمی بل پیش کیا۔ بل کے تحت جنوبی پنجاب اور بہاولپور پر

مشتمل نیا صوبہ بنے گا۔ متذکرہ رکن نے بل پر اتفاق رائے کے لیے خصوصی کمیٹی قائم کرنے تحریک پیش

کی خصوصی کمیٹی حکومت اپوزیشن کے پارلیمانی لیڈرز اور دیگر متعلقہ ارکان پر مشتمل ہو گی۔ سپیکر کو

کمیٹی میں رد و بدل کا اختیار ہو گا۔ سپیکر نے تحریک کی ایوان سے منظوری لی۔ تحریک کو کثرت رائے

سے منظور کر لیا گیا۔ سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ صوبہ جنوبی پنجاب کا بل سینیٹ میں

موجود ہے جو بل پہلے سے کمیٹیوں میں موجود ہے اس کے برعکس حکومتی دوڑ سے ایوان کے تقدس پر

حرف آئے گا۔عجلت کا مظاہرہ کیا جا رہا ہے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ جنوبی پنجاب کو ان کا

حق مل رہا ہے۔تمام جماعتیں ساتھ دیں۔سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے ترمیم کا بل پہلے سے کمیٹی کے

پاس موجود ہے اب عجلت میں حکومت کریڈٹ میں ایسا کر رہی ہے ماحول کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں