166

خود کش حملے کا بارودی مواد سانحہ مال روڈ میں بھی استعمال ہوا،فرانزک رپورٹ

Spread the love

لاہور(جنرل رپورٹر) ڈی جی فرانزک پنجاب ڈاکٹر اشرف طاہر نے کہا ہے کہ

داتا دربار دھماکے کے حوالے سے کیس پر ابھی کام ہو رہا ہے۔ پریس کانفرنس

کے دوران انہوں نے بتایا کہ شواہد کو سمجھنے اور کسی نتیجے پر پہنچنے

کیلئے2 سے3 روز درکار ہوں گے۔ ڈی این اے کی مدد سے یہ نہیں بتایا جا سکتا

کہ اس شخص کا تعلق کس علاقے سے ہے،حملہ آور کے فنگر پرنٹس شناخت

کیلئے نادرا بھیج دیئے گئے ہیں ۔دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب نے ابتدائی

تحقیقاتی رپورٹ وزیراعظم عمران خان کو بھجوا دی، رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ

داتا دربار خود کش حملے کا بارودی مواد سانحہ مال روڈ میں بھی استعمال ہوا۔



اپنا تبصرہ بھیجیں