135

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ،رمضان المبارک کی آمد,اشیائے خوردنوش کی قیمتیں آسما ن پر

Spread the love

لاہور،کراچی(جنرل رپورٹر)پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے اور

رمضان المبارک کی آمد کیساتھ ہی اشیائے خوردنوش کی اشیا کی قیمتیں آسمان

سے باتیں کرنے لگیں،بازاروں میں سرکاری نرخ سے کئی زیادہ قیمت پر پھل اور

سبزیوں کی فروخت ہو تی ر ہیں ، سرکاری نرخ نامے ہی غائب کر دیئے گئے ۔

تفصیلات کے مطابق سرکار کی جانب سے مقرر کردہ نرخوں کو دکانداروں نے

ہوا میں اڑا دیا اور اپنی من مانیوں پر اتر آئے جسے کنٹرول کرنے میں حکومت

مکمل طورپر ناکام ہو گئی۔ضلعی انتظامیہ لاہور نے فئیر پرائس شاپ پر سبسڈی

دی جانے والی اشیاء کے ریٹس جاری کر دئیے ہیں۔فئیر پرائس شاپ پر پیاز

پر30روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔ٹماٹر پر39روپے فی کلو کی سبسڈی دی

جا رہی ہے۔لیموں پر171روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔دال چنا پر 13روپے

کی حکومتی سبسڈی دی جا رہی ہے۔چاول پر 09روپے کی حکومتی سبسڈی دی

جا رہی ہے۔آلو پر 01 روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔بھنڈی پر 06 روپے کی

سبسڈی دی جا رہی ہے۔کریلے پر 06 روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔کدو

پر04روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔دال ماش پر04روپے کی سبسڈی دی جا

رہی ہے۔دال مسور پر04روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔ثابت مسور

پر04روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔سفید چنا پر03روپے کی سبسڈی دی جا

رہی ہے۔سیب (کالاکلو) پر06روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔کیلے پر10روپے

فی درجن کے حساب سے سبسڈی دی جا رہی ہے۔لہسن پر05روپے کی سبسڈی

دی جا رہی ہے۔ادرک پر10روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔چینی پر05روپے

کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔آٹے پر90روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔مٹن

پر50روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔بیف پر25روپے کی سبسڈی دی جا رہی

ہے۔چکن پر10روپے کی سبسڈی دی جا رہی ہے۔ انڈوں پر05روپے کی سبسڈی

دی جا رہی ہے۔ ڈی سی لاہور صالحہ سعید نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ لاہور عوام

الناس کو بہترین سہولیات فراہم کرنے کیلئے ہر ممکن اقدامات اٹھا رہی ہیں۔کراچی

میں آلو کا سرکاری ریٹ 20 روپے فی کلو مقرر کیا گیا ہے تاہم بازار میں 50

روپے فی کلو فروخت ہونے گا اسی طرح ٹماٹر کا سرکاری ریٹ 32 روپے مقرر

ہے تاہم اس کی قیمت بھی بازار میں دگنی ہے،بازار میں درجہ دوئم کے پیاز 42

کے بجائے 60 روپے ، کیلا 50 روپے فی درجن کے بجائے 140 روپے فی

درجن فروخت ہو تا رہا، اسی طرح امرود 105 روپے فی کلو کے بجائے 120

روپے اور سیب درجہ اول 137 کے بجائے 250 سے 500 روپے فی کلو

فروخت ہونے لگا ،پشاور میں بھی دکانداروں کی من مانیاں جاری رہیں۔ ٹماٹر 70

روپے، پیاز 60 روپے اور آلو 40 روپے فی کلو کے حساب سے فروخت کیا

جاتارہا ،کوئٹہ میں بھی رمضان المبارک سے قبل ہی پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں

میں ہوشربا اضافہ کر دیا گیا ،ملک بھر میں پھلوں اور سبزیوں کے علاوہ دودھ،

گوشت سمیت دیگر اشیا کی قیمتیں بھی آسمان سے باتیں کرنے لگیں ،لاہور میں

لگائے گئے 30 رمضان بازاروں میں چینی ہی نایاب ہو گئی، 55 روپے فی کلو

چینی کے حصول کیلئے شہریوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں ،عوام نے حکومت

سے اسٹالز بڑھانے کی اپیل کی ۔



اپنا تبصرہ بھیجیں