توبہ شکن (افسانہ) بانو قدسیہ

28 نومبر 1928ء – تا 4 فروری 2017ء یی بی رو رو کر ہلکان ہو رہی تھی۔ آنسو بے روک ٹوک گالوں پر نکل کھڑے ہوئے تھے۔ “مجھے کوئی خوشی راس نہیں آتی۔ میرا نصیب ہی ایسا ہے۔ جو خوشی ملتی ہے، ایسی ملتی ہے کہ گویا کوکا کولا کی بوتل میں ریت ملا دی مزید پڑھیں

4 فروری کے واقعات ایک سطر میں

واقعات 1797ء – ایکواڈور میں ہولناک زلزلہ، 41 ہزار افراد ہلاک 1969ء – یاسر عرفات فلسطین لبریشن آرگنائزیشن کے چیئرمین بنے 1976ء – گواتیمالا اور ہونڈوراس میں شدید زلزلہ،تقریباً 23ہزار افراد ہلاک ہوئے 1998ء – افغانستان کے شمالی علاقے میں زلزلہ،2ہزار تین سوافراد ہلاک 2004ء – یورپین اسپیس ایجنسی نے آئندہ تین عشروں میں چاند،مریخ مزید پڑھیں

بانو قدسیہ کو ہم سے بچھڑے 2 برس ہو گئے

لاہور (دبی رپورٹر) بانو قدسیہ 28 نومبر، 1928ء کو فیروزپور، برطانوی ہندوستان میں زمیندار گھرانے میں پیدا ہوئیں۔ اُن کے والد چوہدری بدرالزماں چٹھہ زراعت میں بیچلر کی ڈگری رکھتے تھے۔ بانو قدسیہ محض ساڑھے تین برس کی تھیں جب ان کے والد کا انتقال ہو گیا۔ تقسیم ہند کے بعد وہ اپنے خاندان کے مزید پڑھیں