14

حکومت کیخلاف تحریک کا اعلان،نیب نے بلاول کو بلا لیا،پیپلز پارٹی

Spread the love

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)شہید محترمہ بے نظیر بھٹو کی صاحبزادی بختاور بھٹو زرداری اور آصفہ بھٹو زرداری نے کہاہے کہ یہ پہلی بار نہیں ہے کہ نیب نے بلاول بھٹو زرداری کو اس کیس میں غیرقانونی طور پر بلایا ہو۔ ایک بیان میں آصفہ بھٹو نے کہاکہ بلاول بھٹو زرداری گزشتہ برس اس کیس میں پیش ہوئے اور جوابات بھی جمع کرائے، جب بلاول بھٹو زرداری نے آئی ایم ایف بجٹ کے خلاف احتجاج کا اعلان کیا تو پھر آٹھ ماہ بعد نیب نے نوٹس بھیج دیا۔ بختاور بھٹو زر داری نے کہاکہ چینی اور گندم کا بحران ہو یا جہانگیر ترین کا معاملہ اور علیمہ خان کی سلائی مشین، نیب کو کچھ نظر نہیں آتا۔ بختاور بھٹو نے کہاکہ نظر نہ آنے والا بی آر ٹی منصوبہ ہو یا عمران خان کو فنڈنگ کا معاملہ، نیب کو کچھ نظر نہیں ۔

انہوںنے کہاکہ بلاول بھٹو کو سرکاری طور پر غیرمتعلقہ ایک ایسے کیس میں بلایا جارہا ہے جو دونجی کمپنیوں کے درمیان معاہدے سے متعلق ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی نے چیئر مین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زر داری کی نیب طلبی پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ بلاول جب بھی حکومت کی نااہلی پر بات کرتے ہیں نیب کا بدنیتی پر مبنی نوٹس آجاتا ہے ،حکومت تیزی سے مقبولیت کھو چکی ہے ،جمعرات کو پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو کی نیب پیشی کے موقع پر نیب راولپنڈی کے اولڈ آفس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے رہنما نیئر حسین بخاری نے کہا کہ گزشتہ دوسال سے ہماری قیادت کے خلاف پراپیگنڈہ کیا جا رہا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ بلاول جب بھی حکومت کی ناکامیوں پر بات کرتے ہیں نیب نوٹس بھیج دیتا ہے۔قمر زمان کائرہ نے کہا کہ نیب کے سوال ، سوال نہیں کسی کی خواہشیں ہیں۔ انہوںنے کہاکہ حکومت مہنگائی کی وجہ سے اپنی مقبولیت کھو چکی ہے۔نیر بخاری نے کہاکہ جب بھی حکومت کی ناکامی پر بات کی جاتی ہے ، بد نیتی پر مبنی نوٹس آجاتا ہے، بلاول بھٹو پہلے بھی اس کیس میں اپنا مؤقف دے چکے ہیں۔

حکومت کیخلاف تحریک اعلان

قمر زمان کائرہ نے کہاکہ ڈیڑھ سال سے میڈیا چیخ رہا ہے، آج میڈیا آزاد نہیں ہے۔شیری رحمن نے کہاکہ چیئرمین بلاول اس کیس میں قطعًا فریق نہیں ہوسکتے، بلاول بھٹو اس میں بینیفشری نہیں رہے۔شیری رحمان نے کہا کہ بلاول بھٹو کو جس کیس میں طلب کیا گیا ہے وہ اس میں بینیفشری نہیں رہے۔ انہوںنے کہاکہ حکومت انتقامی کارروائیاں کر رہی ہے۔انہوںنے کہاکہ بلاول بھٹو اس میں بینیفشری نہیں رہے۔ چوہدری منظور نے کہاکہ اصل اشو مہنگائی ہے اس سے توجہ ہٹانا چاہتے ہیں، بتایا جائے آٹے چینی کی قیمتوں اضافہ کیوں ہوا۔چوہدری منظور نے کہاکہ بدنیتی پر مبنی کیسز بنائے جارہے ہیں۔ صحافی نے سوال کیا کہ اگر بلاول کو آج گرفتار کیا گیا تو کیا لائحہ عمل ہوگا۔ چوہدری منظور نے کہاکہ کوئی ان کو گرفتار نہیں کرے گا۔ناصر شاہ نے کہاکہ جب بھی حکومت کے خلاف بات کی جاتی ہے نیب نوٹس بھیج دیتا ہے، آصف زرداری اور فریال تالپور پر مقدمات بنائے تاہم کیا نکلا۔ ناصر شاہ نے کہاکہ جھوٹے مقدمات بنائے جاتے ہیں، عمران خان کو ٹیکہ لگا تو انہیں حوریں نظر آنے لگیں۔
حکومت کیخلاف تحریک اعلان

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں