23

کرونا وائرس ،چین میں مزید73افرادہلاک جبکہ 1153صحت یاب ہوگئے

Spread the love

بیجنگ(شِنہوا)چین میں کرونا وائرس کے باعث مزید73افرادہلاک اور 3694نئے مصدقہ مریضوں کی تصدیق ہوئی ہے جس کے بعد مجموعی ہلاکتوں کی تعداد563جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد 28ہزار1800 ہوگئی ہے جن میں سے 3859افراد کی حالت تشویشناک ہے ۔ چین کے قومی صحت کمیشن کے مطابق مجموعی طور پر 1153افراد کو صحت یاب ہونے کے بعد ہسپتال سے فارغ کردیا گیا ۔علاوہ ازیںچینی وزارت خا رجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ممالک اور اقوام متحدہ کے بچوں کیلئے قائم فنڈ نے کرونا وائرس کی روک تھام اور قابو پانے کیلئے چین کو طبی اشیا فراہم کیں جبکہ بعض ممالک نے اشیاء فراہم کرنے کیلئے آمادگی کا اظہار کیا ہے اور کئی ممالک کے لوگوں نے وائرس کے خلاف امداد کی پیشکش کی ہے جسے ہم قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔
وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا ہے کہ ملک میں ابھی تک کرونا وائرس کا کوئی کیس نہیں ہے، ایئر پورٹ پر سکریننگ کے نظام کی خود نگرانی کرتا رہوں گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کرونا وائرس ایمرجنسی کور گروپ کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں کرونا وائرس سے پیدا صورتحال پر تفصیلی غور کیا گیا۔

ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا تمام ایئر پورٹس پر تربیت یافتہ ہیلتھ سٹاف کا اضافہ کر دیا ہے، کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے تیار ہیں، وزارت صحت میں قایم ایمرجنسی آپریشن سیل صورتحال مانیٹر کر رہا ہے، ہسپتالوں میں ممکنہ کیسز کے پیش نظر علیحدہ وارڈز مختص ہیں۔علاوہ ازیں کرونا وائرس کا خطرہ ، تربیلا ڈیم کے چوتھے توسیعی منصوبہ کے چھٹی پر چین جانے والے چینی ملازمین کو واپس آنے سے روک دیا گیا جبکہ منصوبہ پر کام کرنے والے چینی ملا زمین کو چھٹی پر چین نہ جانے کی ہدایت جاری کر دی۔ذرائع نے بتایا کہ منصوبہ پر کام کر والے دیگر تمام چینی ملازمین کو چھٹی پر چین نہ جانے کی بھی ہدایات جاری کر دی گئیں اور چھٹیاں منسوخ کر دی گئیں ،جبکہاسلام آباد ائیر پورٹ پر کرونا وائرس کی سکریننگ کرنے والی مشین خراب ہوگئی ۔ ذرائع کے مطابق مانچسٹر اور لندن سے آنے والی پی آئی اے میں آنے والے مسافروں کی مینوئل چیکنگ کی جاتی رہی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں