پنجاب کے سرکاری ہسپتالوں میں ادویات کاسٹاک ختم ، مریضوں اور ان کے لواحقین کو شدید پریشانی کا سامنا

Spread the love

ادویات نہ ملنے کے باعث بہت سے مریضوں کی زندگیاں خطرے سے دوچار، پی آئی سی سے علاج کرانے والے بہت سے غریب مریضوں کا علاج سالوں تک محیط ہے

لاہور (ہیلتھ رپورٹر)پنجاب کے سرکاری ہسپتالوں میں ادویات کاسٹاک ختم ہونے کے باعث مریضوں اور ان

کے لواحقین کو شدید پریشانی کا سامناـ بالخصوصی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں ادویات دستیاب نہ ہونے

کے باعث دل کی بیماریوں میں مبتلا مریض سخت پریشان ہیں اور انہیں اپنے علاج جاری رکھنے کے لئے

بازار سے مہنگے داموں ادویات خریدنا پڑرہی ہیں ـ مریضوں کے بیشتر لواحقین اپنے پیاروں کو ادویات کی

فراہمی جاری رکھنے کے لئے قرض اٹھانے پر مجبور ہو گئے ہیں ـ شیخ زید ہسپتال میں ٹائیفائیڈ علاج کے

دوران استعمال ہونے والے ٹیکوں سمیت بیشترادویات دستیاب نہیں ہیں جبکہ دیگر بڑے ہسپتالوں میں بھی یہی

صورتحال ہے ـمریضوں اور انکے لواحقین نے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر ادویات فراہم کی جائیں ـ

ادویات نہ ملنے کے باعث بہت سے مریضوں کی زندگیاں خطرے سے دوچار ہو گئی ہیں کیونکہ پی آئی سی

سے علاج کرانے والے بہت سے غریب مریض ایسے ہیں جن کا علاج سالوں تک محیط ہے اور انہیں گزشتہ

کئی سالوں سے ہسپتال سے ادویات مل رہی تھیں مگر گزشتہ چند روز سے ہسپتال میں ان ادویات کا اسٹاک

موجود نہیں ہے مریض جوکہ صوبائی دارالحکومت کے علاوہ پنجاب کے دیگر شہروں سے ادویات لینے

کیلئے سفری مشکلات اٹھا کر آنا پڑتا ہے ـشدید مایوسی کے عالم میں واپس لوٹنے پر مجبور ہیں ـجبکہ ہسپتال

انتظامیہ کی جانب سے یہی کہا جا رہا کہ جب ادویات آئیں گی تو مل جائیں گی

Please follow and like us:

اپنا تبصرہ بھیجیں