نئی گاڑیوں کی خرید، لوڈشیڈنگ پر پنجاب اسمبلی میں قراردادیں جمع

Spread the love

لاہور (جنرل رپورٹر)نئی گاڑیوں کی خریداری اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے معاملے پر پنجاب اسمبلی میں قراردادیں جمع کرادی گئیں ۔گاڑیوں کے بارے میں قرارداد مسلم لیگ ن کی رکن پنجاب اسمبلی عنیزہ فاطمہ نے اور لوڈشیڈنگ کی قرارداد پیپلز پارٹی کے حسن مرتضی نے جمع کرائی۔

گاڑیوں کی خر یداری کے معاملے ایس اینڈ جی اے ڈی کی سمری میں واضح لکھا ہے کہ وزیراعلی نے منظوری دیدی ہے، کچھ تحفظات ظاہر کئے کہ مزید فنڈز کے اجرا کے لئے طریقہ کار اپنانے کی ہدایات بھی کی گئی،ڈاکٹر شہباز گل، فوادچوہدری نے اس ضمن میں بے بنیاد اور حقائق کے برعکس معلومات فراہم کیں۔ حقائق کے برعکس اطلاعات فراہم کرنے سے عوام میں شدید مایوسی کا سامنا کرنا پڑا ہے، فواد چوہدری اوروزیراعلیٰ پنجاب کے ترجمان ڈاکٹر شہبازگل کو فوری طورپر عہدوں سے ہٹایا جائے ۔

غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کے خلاف قرارداد میں کہا گیا ہے کہ گرمی بڑھتے ہی حکومت نے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ شروع کردیا ہے۔ دیہی علاقوں میں 4 سے پانچ جبکہ شہروں میں 2 سے 3 گھنٹے لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے۔ غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے کاروباری سرگرمیاں شدید متاثر ہو رہی ہیں۔حکومت جہاں ہر سطح پر ناکام ہوئی ہے وہیں وہ عوام کو بجلی کی بلا تعطل ترسیل میں بھی ناکام ہوگئی ہے۔

حالانکہ سسٹم میں وافر مقدار میں بجلی موجود ہے۔ اسکے باوجود عوام کو غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا عذاب بھگتنا پڑھ رہا یے۔مہنگائی کے بم کے بعد حکومت نے عوام پر بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا ڈورون حملہ کردیا ہے۔بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے عوام میں شدید تشویش اور غم وغصہ پایا جارہا ہے۔قرارداد میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ بند کرے اور عوام کو بلا تعطل بجلی کی فراہمی یقینی بنائے جائے۔

Please follow and like us:

اپنا تبصرہ بھیجیں