سرینگر ،قابض فوج کی ریاستی دہشت گردی ،مزید4شہری شہید

Spread the love

سری نگر,اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں تازہ ریاستی دہشت گردی میںمزید 4کشمیریوں کو شہید کر دیا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کرکے مزید4کشمیریوں کو شہید کر دیا ہے

اس طرح گزشتہ روز سے اب تک کل7کشمیری بھارتی بربریت کا نشانہ بن چکے ہیں۔تفصیلات کے مطابق ضلع شوپیاں کے علاقے باندی پورہ میں کمسن لڑکے سمیت 4 کشمیریوں کو شہید کردیا جس کے بعد کل سے اب تک شہداء کی تعداد 7ہوگئی۔باندی پورہ میر محلہ میں سرچ آپریشن کے دوران 12 سالہ لڑکے سمیت 4 افراد کو شہید کیا۔گزشتہ روز قابض بھارتی فوج نے ضلع بارہ مولہ میں 3 نوجوانوں کو شہید کیا۔کشمیری میڈیا کے مطابق گزشتہ روز شہید کیے گئے عامر رسول کی نماز جنازہ سوپور میں ادا کی گئی

جس میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔قابض فوج نے بانڈی پورہ، بارہمولہ اور پلوامہ کے اضلاع کے مختلف علاقوںمیں تلاشی اور محاصرے کی کارروائیاں جاری رکھیں۔ نوجوان کے قتل کے خلاف سوپور ٹائون اور ملحقہ علاقوںمیں مکمل ہڑتال جاری ہے ۔دریںاثناء قابض انتظامیہ نے فاروق احمد شاہ اور بشیر احمد سمیت گیا رہ حریت کارکنوںپر کالا قانون پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کرکے انہیں کوٹ بھلوال اور جموں کی دیگر جیلوں میں منتقل کردیاگیاہے۔

قابض انتظامیہ نے حریت فورم کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق کو سرینگر میں انکی رہائش گاہ پر نظربند کردیا ہے۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق میر واعظ عمرفاروق کو قابض انتظامیہ نے سکول پرنسپل رضوان اسد کے دوران حراست قتل کے خلاف نما زجمعہ کے بعد مجوزہ احتجاجی مظاہروں سے قبل نگین میں انکی رہائش گاہ پر نظربند کردیاگیا ہے ۔

مظاہروں کی اپیل مشترکہ حریت قیادت نے کی ہے ۔ انتظامیہ نے میر واعظ عمرفاروق کو گھر سے باہر نکلنے سے روکنے کیلئے انکی رہائش گاہ کے باہر پولیس اہلکاروںکی بھاری نفری کو تعینات کردیا ہے ۔ جماعت اسلامی سے وابستہ ضلع پلوامہ کے علاقے اونتی پورہ کے رہائشی رضوان اسد کو پیر اور منگل کی درمیانی شب سرینگر میں پولیس کی حراست کے دوران تشدد کا نشانہ بناکر شہید کردیاگیاتھا۔

دوسری طرف کشمیرکونسل یورپی یونین کے چیئرمین علی رضا سید نے مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فورسز کے ہاتھوں نہتے کشمیریوں کے ماورائے عدالت قتل خاص طورپر گزشتہ دنوں سکول کے پرنسپل رضوان اسد کے دوران حراست قتل کا معاملہ یورپی اراکین پارلیمنٹ کے سامنے اٹھایاہے۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق علی رضاسید نے یورپی یونین کے اراکین پارلیمنٹ سے مطالبہ کیا کہ وہ بھارت کی نام ونہاد جمہوریت کے دھوکے میں نہ آئیںاور مقبوضہ علاقے میں نہتے کشمیریوں پر بھارتی مظالم کا سلسلہ بند کرانے کیلئے کردار ادا کریں۔

ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت میں اس وقتحالات کشیدہ ہیں، پاکستان امن چاہتا ہے لیکن اس کا اگر ہرگز مطلب یہ نہیں کہ ہم دب جائیں گے،

ہم کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں،مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہوگا۔جمعہ کو مقبوضہ کشمیر پر منعقدہ سمینار سے خطاب کرتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ واجد خان سے پہلی ملاقات فروری میں ہوئی انہوں نے مسئلہ کشمیر کو موثرطریقے سے اٹھایا،ان کی پاکستان کی قیارت سے ملاقاتیں ہوں گی،یو این ایچ سی آر کی رپورٹ جس میں کشمیر میں ہونے والے مظالم کو اٹھایا گیا،

انہو ں نے کہا کہ پاکستان اور بھارت میں اس وقت خالات کشیدہ پاکستان امن چاہتا ہے لیکن اس کا اگر ہرگز مطلب یہ نہیں کہ ہم دب جائیں گے ہم کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں،مسلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہوگا۔

Please follow and like us:

اپنا تبصرہ بھیجیں