کرتار پور راہداری پاکستان اور بھارت کے درمیان خوشگوار تعلقات کا آغاز ہے، وی سی او پی سی چوہدری وسیم اختر

Spread the love
وائس چیئرمین او پی سی چوہدری وسیم اختر کا لندن میں سکھ بزنس کمیونٹی کے عہدےداروں کے ساتھ گروپ فوٹو

لندن (صرف اردو ڈاٹ کام)وائس چیئرپرسن اوور سیز پاکستانیز کمیشن (او پی سی ) پنجاب چوہدری وسیم اختر نے کہا ہے کہ کرتارپور راہداری کا

افتتاح وزیر اعظم عمران خان کا دانشمندانہ اقدام ہے۔

سکھ کمیونٹی اپنے مقدس مقام تک باآسان رسائی پر موجودہ حکومت کی بے حد مشکور ہے

نیز پاکستان میں بھاری سرمایہ کاری کیلئے اعلیٰ سطح مشاورت اور جامع پالیسیاںبھی ترتیب دی جار رہی ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے لندن میں سکھ بزنس کمیونٹی کے چند عہدیداروں سے خصوصی ملاقات میں کیا۔

چوہدری وسیم اختر نے کہا کہ کرتار پور بارڈر کا کھولنا پاکستان اور انڈیادونوں کے لیے امن کا عندلیہ ہے۔

ویزہ فری انٹری اور سکھ یاتریوں کو ہر ممکن سہولیات کی فراہمی کے ساتھ ساتھ ان کے جان و مال کا تحفظ

حکومت کی اولین ذمہ داری ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کرتار پور راہداری پاکستان اور بھارت

کے درمیان پائیدار اور خوشگوار تعلقات استوار کیے جانے کا اہم ذریعہ ثابت ہوگی۔

وی سی او پی سی چوہدری وسیم اختر نے سکھ کمیونٹی کے عہدیداروں کو پاکستان آنے کی

باضابطہ دعوت دیتے ہوئے انہیں پاکستان میں پرامن ماحول اور محفوظ سرمایہ کاری کا بھی یقین دلایا۔

اس ضمن میں سکھ کمیونٹی کا 30 رکنی وفد اگلے ماہ پاکستان کا دورہ بھی کرے گا۔

اس موقع پر صوبائی وزیر برائے ٹرانسپورٹ جہانزیب خان کھچی،

ایم پی اے ملک ندیم عباس، ممبر او پی سی کامران بشیر اور لوکل سینئرز سمیت دیگر سیاسی و سماجی شخصیات بھی موجود تھیں۔

Please follow and like us:

اپنا تبصرہ بھیجیں