21 جنوری کی بجائےمنی بجٹ کا بم عوام پر 23 جنوری کو گرے گا۔ وزیر خزانہ

Spread the love

کراچی چیمبر آف کامرس میں صنعتکاروں سے ملاقات کے دوران وزیر خزانہ نے بتایا کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے سیچوریٹری ریگولیٹری آرڈرز (ایس آر او) کے اجراء کا اختیار ختم کردیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ٹیکس بے ضابطگیوں کو منی بجٹ میںدور کیا جائے گا اور ٹیکسوں کے حوالے سے ہر قسم کی تبدیلی پارلیمنٹ کی منظوری سے ہوگی۔
ملاقات کے دوران صنعتکاروں کی جانب سے ایف بی آر کے نچلے سطح کے افسران کو اختیارات دیئے جانے پر تحفظات کا اظہار کیا گیا۔
وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے اعلان کیا ہے کہ وزیر اعظم کے بیرون ملک کے دورے کی وجہ سے منی بجٹ21 جنوری کی بجائے 23 جنوری کو پیش کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں