ہندو انتہا پسند جماعت کے سربراہ کی سونونگم کو قتل کرنے کی منصوبہ بندی

Spread the love

بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے سابق وزیرنارائن رانے کے بیٹے نلیش نے انکشاف کیا ہے کہ ہندوانتہا پسند جماعت شیو سینا کے سربراہ بال ٹھاکرے نے گلوکار سونو نگم کو قتل کرنے کی منصوبہ بندی کی تھی۔ میڈیا کے مطابق سابق بھارتی وزیرکے بیٹے نلیش نے انکشاف کیا کہ بال ٹھاکرے نے نا صرف گلوکار سونونگم کو قتل کرنے کی منصوبہ بندی کی تھی بلکہ ان کے کہنے پرشیوسینا کے نمائندوں نے سونو نگم پرقاتلانہ حملہ بھی کیا تھا اورسونونگم اپنے قتل کی منصوبندی سے واقف تھے۔نلیش نے اپنے الزامات کا کوئی ثبوت فراہم نہیں کیا اورکہا کہ سونو نگم اور بال ٹھاکرے کی فیملی کے درمیان تعلقات کی نوعیت کیا تھی اس بارے میں میری زبان نہ کھلوائی جائے۔دوسری جانب سونو نگم نے سابق بھارتی وزیر کے بیٹے کی جانب سے کیے جانے والے انکشافات پر کوئی بیان جاری نہیں کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں