ہندو انتہا پسند جماعت نے’مانی کرنیکا‘ ریلیز کرنے پر دنگا فساد کرنے کی دھمکی دے دی

Spread the love

بھارتی ہندو انتہا پسند جماعت نے کنگنا رناوت کی فلم ’مانی کرنیکا : جھانسی کی رانی‘ ریلیز کرنے پر دنگا فساد کرنے کی دھمکی دے دی۔بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی انتہا پسند جماعت کے سربراہ سکھ دیو سنگھ نے فلم ’مانی کرنیکا ‘ پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ فلم میں رانی کے برطانوی افسر سے مراسم دکھائے گئے ہیں جب کہ فلم میں رانی کو آئٹم سانگ پر رقص کرتے بھی دیکھا جا سکتا ہے جوکہ معاشرتی اقدار کے خلاف ہے۔انتہا پسند جماعت کے سربراہ نے یہ بھی کہا کہ ایک بار پھر فلم میکرز کی جانب سے فلم میں جستجو بڑھانے کے لیے کچھ نامناسب سین شامل کیے گئے ہیں جسے ہم برداشت نہیں کریں گے، ہم نے فلم میکرز سے کہا بھی ہے کہ فلم ریلیز کرنے سے قبل ہمیں دکھائی جائے اگر فلم ہمیں دکھائے بغیر ریلیز کرنے کی کوشش کی گئی تو ہم فساد کر دیں گے۔گزشتہ سال بھی فلم ’پدماوت‘ کی حق میں سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے کے باوجود فلم کو کئی ریاستوں میں ریلیز ہونے نہیں دیا گیا تھا اور فلم مانی کرنیکا کو بھی کچھ ایسا ہی سامنا کرنا پڑے گا۔واضح رہے کہ کرش کی ہدایت کاری میں بننے والی کنگنا رناوت کی فلم ’مانی کرنیکا: جھانسی کی رانی‘ 25 جنوری 2019ء میں یوم جمہوریت کے موقع پر ریلیز کی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں