پولیو کا خاتمہ قومی ترجیحات میں شامل ہے، پولیو کے خاتمے کے لیے دو سال درکار ہیں۔

Spread the love

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی و اصلاحات و شماریات مخدوم خسرو بختیار نے کہا ہے کہ پولیو کے مکمل خاتمے اور فالو اپ کے لئے مزید دو سال کا عرصہ درکار ہو گا، اس مرض کا خاتمہ قومی ترجیحات میں شامل ہے اور اس پر مکمل قابو پانے کے لئے جامع منصوبہ بندی کی ضرورت ہے۔ سی ڈی ڈبلیو پی کے اجلاس میں وزارت نیشنل ہیلتھ سروسز کی جانب سے پولیو کے خاتمے کے حوالے سے 986 ملین ڈالرز کی لاگت کا نظر ثانی شدہ منصوبہ پیش کیا جس کا مقصد ملک میں پولیو کا خاتمہ کو یقینی بنانا ہے۔ وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی و اصلاحات خسرو بختیار نے اس منصوبے پر بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ملک سے پولیو کا خاتمہ حکومت کی اولین ترجیحات میں سے ایک ہے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ اس منصوبے کی ہم آہنگی اور عمل درآمد کو یقینی بنانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کیے جائیں۔ اجلاس میں منصوبے کو حتمی منظوری کے لیے ایکنک بھجوا دیا گیا۔ واضح رہے کہ گذشتہ ہفتے سی ڈی ڈبلیو پی کے اجلاس میں اس منصوبے کو عبوری منظوری دی گئی تھی۔ نظرثانی شدہ تین سالہ منصوبے کی لاگت 347 ملین ڈالر ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں