صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا سی پی این ای کے عارف نظامی گروپ کے زیر اہتمام پاکستان میڈیا کنونشن سے خطاب

Spread the love

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے جمہوریت کے تحفظ کے لئے ذرائع ابلاغ کی جدوجہد کو سراہتے ہوئے میڈیا پر زور دیا ہے کہ وہ صحت سے متعلق اور سماجی مسائل کو اجاگر کرنے میں اپنا فعال کردار ادا کرے۔ انہوں نے یہ بات جمعہ کو کونسل آف پاکستان نیوز پیپرز ایڈیٹرز (سی پی این ای) کے زیر اہتمام پاکستان میڈیا کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ کنونشن میں سی پی این ای کے صدر عارف نظامی، جنرل سیکریٹری عبدالجبار خٹک اور میڈیا کی صنعت سے وابستہ ممتاز شخصیات نے شرکت کی۔ صدر مملکت نے مختلف سماجی مسائل کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں تقریباً 90 فیصد خواتین اپنے وراثتی حق سے محروم رہتی ہیں۔ انہوں نے ذرائع ابلاغ پر زور دیا کہ وہ ایسے مسائل کو اجاگر کرتے ہوئے حکومت کی معاونت کرے اور عوام میں شعور اجاگر کرے۔ صدر مملکت نے سماجی مسائل کے بارے میں عوامی خدمت کے حامل پیغامات کو زیادہ سے زیادہ جگہ دینے والے میڈیا اداروں کو ایوارڈز دینے کا بھی عندیہ دیا۔ میڈیا کو درپیش مالیاتی بحران کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے امید ظاہر کی کہ قومی معیشت میں بہتری سے میڈیا کے شعبہ میں بھی معاشی طور پر بہتری آئے گی تاہم پرنٹ میڈیا کو ڈیجیٹل اور سوشل میڈیا جیسے چیلنجوں سے نبرد آزما ہوتے ہوئے ابھرنا ہوگا۔

یاد رہے کہ سی پی این کی کے دو گروپ ہیں اور یہ کنونشن محترم عارف نظامی وغیرہ کی طرف سے منعقد کیا گیا تھا۔ اس گروپ میں معدودے چند افراد شامل ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ صدر مملکت نے ذرائع ابلاغ کے اداروں کی معاشی صورتحال پر تسلی دے کر دامن سمیٹ لیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں