سانحہ ساہیوال کے جاں بحق افراد کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی ۔ ذیشان کے لواحقین کا تدفین سے انکار۔

Spread the love
ذیشان کے شناختی کارڈ کا عکس

سانحہ ساہیوال کے جاں بحق افراد کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی نماز جنازہ میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی اور خلیل اسکی اہلیہ اور اس کی بیٹی اریبہ کو شہر خموشاں تدفین کر دی گئی

سانحہ ساہیوال میں جاں بحق ہونے والوں کی نماز جنازہ ادا کی جا رہی ہے

لیکن ذیشان کے لواحقین نے ذیشان کی میت کو دفن کرنے سے انکار کر دیااور کہا کہ جب تک ہمارے بھائی سے دہشت گردی کے الزامات خارج نہیں کیے جاتے اس وقت میت کی تدفین نہیں کی جائے گی۔

ذیشان کی میت

لواحقین کے مقامی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ذیشان دہشت گرد نہیں تھا وہ پہلے سکول میں پڑھاتا تھا اور اس کے بعد اس نے لیپ ٹاپ کا کاروبار کر لیا تھا اور اس کا دہشت گردی سے کوئی تعلق نہیں ہے مظاہرین نے بتایا کہ ہم نہیں چاہتے کہ ذیشان کی بیٹی کو دہشت گرد کی بیٹی کہا جائے۔آخری خبر آنے تک ذیشان کے لواحقین نے لاہور کے فیروز پور روڈ پر میت رکھ کر دھرنا دیا ہوا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں