تمام صوبے گیس کی دریافت کے لیے کمپنیاں بنائیں گے: مشترکہ مفادات کونسل میں فیصلہ

Spread the love

وفاقی وزیر پیٹرولیم غلام سرور کا وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال کے ہمراہ ذرائع ابلاغ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کی ہدایت پر صوبوں کی قیادت سے ملاقاتیں کر رہا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت اپوزیشن کو ساتھ لے کر چلنا چاہتی ہے، جمہوریت میں بات سننا اور سمجھنا ہی جمہوریت کا اصل حسن ہے۔
وفاقی وزیر پیٹرولیم نے بتایا کہ مشترکہ مفادات کونسل نے فیصلہ ہے کہ تمام صوبے گیس کی دریافت کے لیے کمپنیاں قائم کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ ہم جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں اسی لیے ہم مسائل کےحل کے لیے خود صوبوں کے پاس آئے ہیں تاکہ ان کے مسائل معلوم کیے جا سکیں اسی سلسلہ میں سندھ کے وزیراعلیٰ سے بھی ملاقات کی اور ان کے مسائل سنے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ
صوبوں کے معاملات مشاورت سے حل کیے جا سکیں گے۔
غلام سرور کا کہنا تھا کہ صوبائی مسائل پر ورکنگ گروپس اور کمیٹیاں بنائی ہیں، عوام جلد مثبت تبدیلی دیکھیں گے۔
ان کا کہنا تھا کہ تمام کمپنیوں کےبورڈ آف ڈائریکٹرز کی ازسرنوتشکیل ہوگی،
انہوں نے اپنی تجاویز دیتے ہوئے کہا کہ کمپنیوں کے بورڈ آف ڈائریکٹرز میں تمام صوبوں کو نمائندگی دی جانی چاہیے۔
صوبوں کی نمائندگی کے لیے ایک حکومتی اور ایک پرائیویٹ سیکٹر سے نمائندہ ہونا چاہیے۔
انہوں نے خیال ظاہر کیا کہ وزارت پیٹرولیم کے تحت کمپنیوں میں بلوچستان کی نمائندگی مناسب نہیں رہی۔

Please follow and like us:

اپنا تبصرہ بھیجیں