بیرسٹر ایس ایم ظفر کے صاحبزادے اور بیرسٹر علی ظفر کے بھائی طارق ظفرکراچی میں انتقال کر گئے۔

Spread the love

پاکستان کے معروف قانون دان بیرسٹر ایس ایم ظفر کے صاحبزادے اور بیرسٹر علی ظفر کے بھائی طارق ظفر گذشتہ روز کراچی میں انتقال کر گئے۔

اس سلسلہ میں چند میڈیا ہاوسز کی طرف سے غلط فہمی اور جلد بازی کی وجہ سے ایس ایم ظفر کے انتقال کی خبر چلا دی۔

نامور قانون دان وسیم شہابی نے تمام میڈیا ہاوسز کو فون کر کے خبر درست کرائی اور نمائندہ صرف اردو ڈاٹ کام سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بیرسٹر علی ظفر اور طارق ظفر گذشتہ روز اپنے والد ایس ایم ظفر کو علاج معالجہ کی غرض سے لے کر کراچی گئے جہاں اچانک طارق ظفر کا حرکت قلب بند ہو جانے سے انتقال ہو گیا وہاں موجود ڈاکٹروں نے ابتدائی طبی امداد کے دوران ہی طارق ظفر کی موت کی تصدیق کر دی تھی۔

وسیم شہابی نے کہا چونکہ ایس ایم ظفر صاحب کی طبیعت ناساز رہتی ہے اس لیے یہ غلط فہمی ہوئی کہ شاید ان کا انتقال ہو گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ طارق ظفر کی میت کراچی سے لاہور لائی جا رہی اور اور ان کی نماز جنازہ کل بروز جمعرات 24 جنوری 2019 کو TECh سوسائٹی کینال بنک لاہور کی مسجد میں بعد از نماز عصر شام 4 بجے ادا کی جائے گی۔

واضح رہے کہ ایس ایم ظفر اور علی ظفر جہان پاکستان کے بڑے قانون دان ہیں وہاں ایس ایم ظفرسابق نگران وفاقی وزیر قانون جبکہ علی ظفر نگران وفاقی وزیر قانون اور وفاقی وزیر اطلاعات رہ چکے ہیں

لاہور ہائی کورٹ سے وکلا کی بڑی تعداد نے طارق ظفر کے انتقال پر گہرے رنج کا اظہار کیا اور مرحوم کے ایصال ثواب کے دعا مغفرت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں