برطانیہ ،پارلیمنٹ کی اکثریت نے بریگزٹ معاہدے کومستردکردیا

Spread the love

بریگزٹ کے بحران پر برطانوی پارلیمنٹ میں بحث اور ووٹنگ کے آغاز پر حکمران جماعت ٹوری بند گلی میں پھنس گئی ،پارلیمنٹ کی اکثریت نے ٹوری پارٹی کے بریگزٹ سمجھوتے کو یکسر مسترد کردیا ۔ا گر برطانوی وزیراعظم تھریسامے کی یورپی یونین کیساتھ ڈیل کو شکست کا سامنا کرنا پڑا تو وہ مڈٹرم انتخابات کے علاوہ دوسرے ریفرنڈم کا اعلا ن بھی کر سکتی ہیں تھریسا مے اگر ازخود مستعفی نہ ہوئیں تو لیبر پارٹی کے سربراہ جرمی کوربین نے اعلان کیا ہے کہ وہ ان کیخلاف تحریک عدم اعتماد پیش کریں گے ۔حکمران جماعت ٹوری پارٹی کی حلیف جماعتیں سکاٹش نیشنل پارٹی ڈی او پی پر لیبر پارٹی کی ہمنوا بن گئی ہیں اس وقت پارلیمنٹ میں لیبر پارٹی کے 262 سکاٹش نیشنل پارٹی کے 35 ممبران ہیں جبکہ کنزرویٹو پارٹی کے 114 ممبران پارلیمنٹ نے بھی بریگزٹ پر اپنی ہی حکمران جماعت کے خلاف علم بغاوت بلند کر دیا ہے سیاسی پنڈتوں کے مطابق حکمران جماعت کو تاریخ میں دوسری بڑی شکست کا سامنا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں