آصف زرداری اور فریال تال پور کی منی لانڈرنگ کیس: ضمانت میں 14 فروری تک توسیع

Spread the love

بینکنگ کورٹ میں میگا منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہوئی تو آصف علی زرداری، فریال تالپور اور دیگر ملزمان عدالت کے روبرو پیش ہوئے تاہم ایف آئی اے کے تفتیشی افسر اسلام آباد میں ہونے کے باعث پیش نہ ہوسکے۔

اس موقع پر عدالت نے کہا کہ تفتیشی افسر موجود ہے، نہ ایف آئی اے کا ریکارڈ، کیس کیسے چلائیں، پہلے سپریم کورٹ کے فیصلے، ریکارڈ اور تفتیشی افسر کو آنے دیں۔

بینکنگ کورٹ کے فاضل جج نے ریمارکس دیے کہ عدالت کیس سننے کو تیار ہے، مگر فائل موجود نہیں، عبوری چالان موجود ہے اور عدالت اسی کی بنیاد پر ضمانت سن سکتی ہے۔

عدالت نے ایف آئی اے کے وکیل سے مکالمے کے دوران کہا فائل ہے تو درخواست ضمانت پر دلائل دے دیں۔

اس موقع پر انور مجید کے وکیل نے درخواست کی کہ ایف آئی اے اب حتمی چالان پیش کرے تاکہ عدالت میں سماعت کی جائے، جس پر ایف آئی اے پراسیکیوٹر ممتاز الحسن نے مؤقف اختیار کیا سپریم کورٹ کے حکم میں صرف معاملہ نیب کو بھیجنے کا کہا گیا ہے۔

عدالت نے قرار دیا کہ تھوڑا انتظار کرلیں اور ریکارڈ آنے دیں، آپ کو پورا موقع دیں گے۔

عدالت نے آصف علی زرداری، فریال تالپور اور دیگر 9 ملزمان کی عبوری ضمانت میں 14 فروری تک توسیع کرتے ہوئے منی لانڈرنگ کیس کی سماعت 14 فروری کے لیے ملتوی کردی۔

جب کہ عدالت نے کیس میں نامزد انور مجید اور عبدالغنی کی ضمانت کی درخواست پر سماعت 6 فروری کے لیے ملتوی کردی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں