امریکہ ایران پر حملے کا بہانہ ڈھونڈ رہاہے، امریکی جریدہ

Spread the love

امریکہ اور ایران میں ایک بار پھر کشیدگی انتہا پر امریکی جریدے کے مطابق امریکا ایران پر حملہ کرنے کے لیے بہانے ڈھونڈ رہا ہے۔

امریکا اور ایران کے درمیان سرد جنگ کسی بھی وقت بڑے سانحہ کوجنم لے سکتا ہے۔ امریکی جریدے نے خوفناک انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ ایران پر حملے کے لیے بہانے ڈھونڈ رہی ہے۔ ایران پر امریکی پابندیوں اور ایٹمی معاہدے سے علیحدگی کے پیچھے جان بولٹن کا ہاتھ ہے جو تہران کے خلاف عسکری کارروائی کے لیے سر توڑ کوشش کر رہے ہیں۔

گذشتہ برس عراق میں امریکی سفارتخانوں کے قریب راکٹ حملوں کے بعد جان بولٹن نے پینٹاگون سے ایران کے خلاف عسکری کارروائی کی سفارش کی تھی جسے اس وقت کے وزیر دفاع جیمز میٹس نے مسترد کر دیا۔ رپورٹ کے مطابق جیمز میٹس نے جان بولٹن سے اختلافات کے باعث ہی استعفیٰ دیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں